فیس بک (بعض اوقات مختصر کرکے ایف بی) ایک سوشل نیٹ ورکنگ سروس اور ویب سائٹ ہے جو فروری 2004 میں شروع ہوئی تھی۔ اسے مارک زکربرگ نے ہارورڈ کے طلباء کو جوڑنے کے لیے بنایا تھا۔ فیس بک میٹا کمپنی کے ماتحت کام کرتی ہے۔ 9 ستمبر 2012ء تک یہ تاریخ کی سب سے بڑی سوشل میڈیا ویب سائٹ بن چکی تھی۔ اس وقت فیس بک کے ایک 2.91 ارب سے زیادہ ایکٹیو صارفین ہیں۔

فیس بک سے پیسے کمانے کے لیے ہم نے اس ویب سائٹ پر ایک اور آرٹیکل بھی شائع کیا ہے جو آپ کو فیس بک سے پیسے کمانے کے 5 طریقوں کے بارے میں بتائے گا۔

فیس بک کا اصل مقصد کیا تھا؟

فیس بک یا "The Facebook” جیسا کہ اس وقت اس کا نام تھا، کا اصل مقصد ہارورڈ یونیورسٹی کے طلباء کو اپنے ".edu” والے ای میل ایڈریسز اور تصاویر کو استعمال کرتے ہوئے ایک دوسرے سے رابطہ کرنے کے قابل بنانا تھا۔

اس وقت کے طالب علم مارک زکربرگ نے کالج کے موجودہ سماجی تجربے کو انٹرنیٹ پر لانے کا ایک طریقہ سوچا۔ وہ ایک ایسی جگہ بنانا چاہتا تھا جس سے کالج کے طلباء کو آپس میں جڑنے میں مدد مل سکے۔

مارک زکربرگ نے فیس بک کیوں بنائی؟

جنوری 2004 میں، مارک زکربرگ نے نئی سائٹ کے لیے کوڈ لکھنا شروع کیا جسے بعد میں فیس بک بننا تھا۔ اس کی تحریک فیس بک کے متنازعہ پیشرو "FaceMash” پر The Harvard Crimson نامی میگزین میں شائع ہونے والے ایک اداریے سے ملی۔

اس ویب سائٹ نے صارفین کو اس قابل بنایا کہ وہ ہارورڈ کے طلباء کے چہروں کا موازنہ کریں اور ان کی کشش کی بنیاد پر درجہ بندی کر سکیں۔ صرف ایک ہی رات میں اس ویب سائٹ پر 22،000 سے زیادہ لوگ آئے جو اس کی بہت تیز مقبولیت کا پیش خیمہ تھا۔

زکر برگ کی بد قسمتی یہ تھی کہ اس ویب سائٹ نےہارورڈ کے سکیورٹی سسٹم کو ہیک کر کے ان کی سکیورٹی پالیسی کی خلاف ورزی کی اورر طلباء کی تصاویر بھی چرائیں۔ جس کی وجہ سے چند ہی دنوں میں اس ویب سائٹ کو یونیورسٹی کی طرف سے بند کر دیا گیا۔ حیران کن طور پر زکر برگ یونیورسٹی سے نکالے جانے سے بچ نکلا۔

"FaceMash” کے ساتھ اس کے تجربے نے ایک نئی سائٹ کے خیال کو جنم دینے میں مدد کی — ایک سوشل نیٹ ورکنگ سائٹ جہاں ہارورڈ کے طلباء اپنے ".edu” ای میل ایڈریسز اور تصاویر کو اسکول کے دوسرے طلباء سے رابطہ قائم کرنے کے لیے استعمال کر سکتے ہیں۔ اب اسے اس ویب سائٹ کے لیے صرف ایک پُر کشش نام کی ضرورت تھی۔

بعد میں فیس بک کی بنیاد 2004 میں مارک زکربرگ، ایڈورڈو سیورین، ڈسٹن ماسکووٹز، اور کرس ہیوز نے رکھی تھی – یہ سبھی ہارورڈ یونیورسٹی کے طالب علم تھے۔ اس کے فوری بعد thefacebook.com کے یو آر ایل سے ایک نئی ویب سائٹ لانچ ہو گئی۔ یہ ویب سائٹ بہت تیزی سے کامیاب ہوئی۔ صرف 24 گھنٹوں میں 12,00سے زائد طلباء نے اپنا اکاؤنٹ بنایا۔ ایک مہینے کے اندر ہارورڈ کے آدھے سے زیادہ طلباء اپنا اکاؤنٹ بنا چکے تھے۔ جلد ہی یہ امریکا کے تین مزید کالجز Yale, Columbia, اور Stanford میں پھیل چکی تھی۔

Guardian کے مطابق؛

"یہ ایڈریس $200,000 میں خریدے جانے کے بعد اگست 2005 میں Facebook.com بن گیا۔ دیگر امریکی ہائی سکولز ستمبر 2005ء تک سائن اپ کرنے کے قابل ہو چکے تھے۔ پھر یہ دنیا بھر میں پھیلنا شروع ہوا اور برطانیہ کی یونیورسٹیوں تک بھی جا پہنچا۔ ”

فیس بک کا پہلا صارف کون تھا؟

یہ جان کر آپ بالکل بھی حیران نہیں ہوں گے کہ فیس بک پر بننے والی پہلی پروفائل کسی اور کی نہیں خود مارک زکربرگ کی ہی تھی۔ صارف پروفائل URLs کو ان کی موجودہ شکلوں میں تبدیل کرنے سے بہت پہلے، وہ کچھ اس طرح نظر آتے تھے:

"http://www.facebook.com/profile.php?id=”

زکر برگ کے اکاؤنٹ کی آئی ڈی 4 تھی۔ پہلی تین آئی ڈی یقینی طور پر آزمائشی اکاؤنٹس کی تھی۔ پہلا "حقیقی” فیس بک صارف، جس کی آئی ڈی 5 تھی، کرس ہیوز، زکربرگ کے دوست اور فیس بک کے شریک بانی تھے۔ بظاہر اگلے چند درجن اکاؤنٹ زکربرگ کے دوست، ہم جماعت اور روم میٹ کے ہی تھے۔

دلچسپ بات یہ ہے کہ بزنس انسائیڈر نے چند سال قبل ایک ریسرچ کی اور پہلے 20 فیس بک اکاؤنٹس اور ان کے ایک دوسرے کے ساتھ تعلقات کو دریافت کیا۔

فیس بک تنازعات سے پاک نہیں ہے

فیس بک کے بارے میں کوئی بھی بات اس کی پوری تاریخ میں کمپنی کے مختلف تنازعات پر بحث کے بغیر مکمل نہیں ہوگی۔ ہم پہلے ہی کمپنی کے خلاف کچھ ابتدائی مقدمات کو دیکھ چکے ہیں، فیس بک چند دیگر، مبینہ طور پر مشتبہ سرگرمیوں کے لیے بھی مشہور ہے۔ فیس بک کے ساتھ جڑنے والے تنازعات کی ایک بڑی وجہ "جعلی خبروں” کا واضح پھیلاؤ ہے۔

2016 کے امریکی صدارتی انتخابات کے دوران صحافیوں کی توجہ میں آنے کے بعد، فیس بک پر الزام لگایا گیا ہے کہ اس نے انتخابی نتائج کو متاثر کرنے کے مقصد سے پروپیگنڈا پھیلانے کے لیے جعلی روسی فیس بک اکاؤنٹس کو لاکھوں ڈالر کے ادا شدہ اشتہارات خریدنے کی اجازت دی تھی۔ فیس بک کے خلاف بہت سے تنازعات اور غیر اخلاقی عمل کے الزامات ہیں۔ کمپنی کے سائز، اور ان کے کاروبار کی نوعیت کو دیکھتے ہوئے، اس صورتحال کے جلد تبدیل ہونے کا امکان نہیں ہے۔

فیس بک پر پروفائل کیسے بنائی جاتی ہے؟

فیس بک پروفائل بنانے میں 5 منٹ سے بھی کم وقت لگتا ہے، اور فیس بک پر اشتہار دینے کے لیے یہ پہلا قدم ہے۔ فیس بک کا تقاضا ہے کہ تمام اشتہارات صارف کے اکاؤنٹ سے کیے جائیں۔ آپ کو فیس بک پر ایڈ ایجنسی بننے کی ضرورت نہیں ہے۔ فرق صرف اتنا ہے کہ اگر آپ فیس بک ایڈورٹائزنگ کمپنی کا حصہ ہیں تو آپ کو مشترکہ کاروباری اکاؤنٹ تک رسائی حاصل ہوگی۔

اپنا فیس بک پروفائل ترتیب دینے کے لیے، ان آسان اقدامات پر عمل کریں۔

1۔ سائن اپ کریں

www.facebook.com پر جائیں، مطلوبہ معلومات درج کریں اور "سائن اپ” پر کلک کریں۔

2۔ اپنی پروفائل پکچر لگائیں

  • صفحہ کے اوپر کے بائیں کونے میں "edit profile ” پر کلک کریں۔
  • پیچ کے اوپر کے بائیں کونے میں "Add Profile” پر کلک کریں۔
  • "Upload Photo” پر کلک کریں اور اپنی بہترین نظر آنے والی تصویر کو منتخب کریں۔
  • اپنی ایک اچھی نظر آنے والی تصویر کا انتخاب کریں اور "Open” پر کلک کریں۔
  • اپنی تصویر کو اس طرح تبدیل کریں جس طرح آپ چاہتے ہیں اور "Save” پر کلک کریں۔

3۔ آپ کا اکاؤنٹ بن گیا!

مبارک ہو، آپ نے اپنا فیس بک پروفائل بنالیا ہے! اب آپ اپنے دوستوں سے رابطہ کر سکتے ہیں، تصاویراور ویڈیوز شیئر کر سکتے ہیں اور فیس بک اشتہارات بنا سکتے ہیں۔ اس کے بعد کیا ہے؟ فیس بک ایڈورٹائزنگ کمپنی کی طرح سوچیں۔ آپ فین پیج بنا سکتے ہیں یا فیس بک ایونٹ شروع کر سکتے ہیں۔

آپ کا فیس بک اکاؤنٹ اور اس کی پرائیویسی

جب فیس بک اور پرائیویسی کو ایک ہی جملے میں استعمال کیا جائے تو یہ ایک حساس موضوع ہو سکتا ہے۔ یہاں تک کہ کچھ لوگ اپنے فیس بک اکاؤنٹس کو بھی مکمل طور پر ختم کر دیتے ہیں کیونکہ وہ اپنی معلومات کے آن لائن ہونے کے حوالے سے ہچکچاتے ہیں۔ تاہم، اگر آپ کو کسی اہم گروپ کا حصہ بننے یا مارکیٹنگ کے مواقع کے لیے فیس بک اکاؤنٹ بنانا ضروری ہے تو مایوس نہ ہوں۔

ایسے اقدامات موجود ہیں جو آپ فیس بک جیسے بڑے پلیٹ فارم کے ساتھ جڑ کر اپنے اکاؤنٹ کو محفوظ بنانے کا لیے اٹھا سکتے ہیں۔ اکاؤنٹ بناتے ہی اگر آپ کو مندرجہ ذیل اقدامات موثر لگتے ہیں تو انہیں فوری طور پر اٹھائیں۔

فیس بک کی پرائیویسی کی پوری setting اوپری دائیں کونے میں گیئر کے icon پر ڈراپ ڈاؤن ونڈو کے اندر ہے۔ یہ setting آپ کے اکاؤنٹ کو محفوظ بنانے کے لیے بڑے پیمانے پر کردار ادا کرتی ہے۔ یہاں، آپ منتخب کر سکتے ہیں کہ آپ کی ماضی، حال اور مستقبل کی پوسٹس کون دیکھ سکتا ہے: آپ کے دوست، دوستوں کے دوست، عوام یا محدود لوگ۔ وہ اختیارات منتخب کریں جن سے آپ کو اپنا اکاؤنٹ محفوظ محسوس ہو۔

آپ یہ بھی منتخب کر سکتے ہیں کہ کون آپ کو تلاش کر سکتا ہے یا فرینڈ ریکوئسٹ بھیج سکتا ہے۔ خاص طور پر اگر Facebook آپ کا فون نمبر یا ای میل دوسروں کو آپ کی سفارش کرنے کے لیے استعمال کرے۔ اگر یہ آپ کے لیے کام نہیں کرتا ہے، تو اس آپشن کو بند کردیں۔ ایک اور چیز جس پر آپ خاص طور پر نظر رکھنا چاہتے ہیں وہ یہ ہے کہ کیا آپ چاہتے ہیں کہ سرچ انجن کے ذریعے آپ کو تلاش کیا جا سکے۔ اگر نہیں، تو پرائیویسی کی فہرست کے اس حصے پر جائیں اور اسے بند کر دیں۔

5 thoughts on “فیس بک کا آغاز اور اس پر اکاؤنٹ بنانے کا طریقہ

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

This site uses cookies to offer you a better browsing experience. By browsing this website, you agree to our use of cookies.